Urdu To English paragraph for 2nd year

Oct 22, 2018

Urdu To English paragraph for 2nd year

Urdu to English Paragraph for 2nd Year Students

Here are some Urdu to English paragraph translation notes for 2nd year. These are solved English translation paragraphs for F.Sc part II English. Intermediate Part II English Urdu to English paragraphs for translation in English.
You may also Read:


Paragraph 1
تندرستی بڑی نعمت ہے۔ لیکن آدمی جب تک تندرست رہتا ہے اس نعمت کی قدر نہیں کرتا۔ جب کوئی معمولی بیماری بھی اسے  آ کر گھیر لے تو اس کی قدر معلوم ہو جاتی ہے۔ اگر جسم کے کسی حصے میں تکلیف ہو جاتی ہےتو سارا جسم اثر قبول کرتا ہے۔ تندرستی ہو تو کھانے پینے، چلنے پھرنے اور کام کرنے میں جی لگتا ہے۔ صحت خراب ہو جائے تو کسی چیز میں مزہ نہیں آتا۔جو لوگ اکثر بیمار رہتے ہیں ان کی زندگی خود ان کے اور ان کے دوسرے متعلقین کے لیے وبالِ جان بن جاتی ہے۔
English Translation:
Health is a great blessing but man does not value it as long as is healthy. When he catches a minor disease, he realizes its worth. If there is a pain in any part of the body, the whole body feels its presence. If a man is healthy, he enjoys eating, drinking, walking and working. If health is broken, everything becomes tasteless. The people who are often ill, their life become troublesome for themselves and for their relatives.

Paragraph 2
رشوت ستانی اور بد عنوانی ہمارے معاشرے کا حصہ بن چکی ہے۔ ان کا تعلق کسی  ایک ادارے یا سوسائٹی کے مخصوص  حصے سے نہیں ہے۔ بلکہ یہ تو ہر محکمے اور ہر ادارے کا لازمی جزو نظر آتی ہیں۔  زندگی اب  بالکل سادہ نہیں  رہی۔  درمیانہ طبقہ دولت مندوں کی نقل میں  اپنے راستے سے بھٹک گیا ہے۔  ہم سامانِ تعیش کو حاصل کرنے  میں اپنا بہت سا وقت صرف کر دیتے ہیں۔  دوسروں کو نیچا دکھانے اور راتوں رات امیر بننے  کی دوڑ معاشرے کو رشوت ستانی اور  بد عنوانی کی طرف دھکیل رہی ہے۔
English Translation:
Bribery and corruption have become a part of our society. These things are not related to a specific part of a single department or a society. It seems to be a necessary component of every department and institution. Life is no more quite simple. The middle class has lost its way in order to follow rich people. We lose a lot of time in getting the luxuries of life. The race to defeat other and to become rich is pushing the society towards bribery and corruption.

Paragraph 3
علم ایک عظیم قوّت ہے۔  علم کے زریعے ہمیں مادی دولت ہی نہیں بلکہ روحانی سکون بھی حاصل ہوتا ہے۔ ہمارے مذہب میں علم حاصل کرنا ہر شخص پر فرض ہے۔  یہ ایک ایسی چیز ہے جسے کوئی چرا نہیں سکتا۔ علم کے بغیر کوئی انسان اپنی ذات کو بھی نہیں پہچان سکتا اور یوں ہی ساری زندگی اپنے مقصدِ حیات سے بے خبر رہتا ہے۔  علم حاصل کر کے انسان اپنی ، اپنے معاشرے اور قوم کی  بہتری کا سبب بن سکتا ہے۔


English Translation:
Knowledge is a great power. Knowledge not only gives us not only money but also spiritual satisfaction. In our religion, getting knowledge is obligatory for everyone.  This is the thing that cannot be stolen. Without knowledge, no man can recognize himself and is unaware of his objective throughout his life. Having the knowledge got, a man can bring about the betterment of himself, his society, and his nation.


Paragraph 4
پاکستان ایک امن پسند ملک ہے۔ ہم اپنے ہمسایوں سے ہمیشہ دوستانہ تعلقات رکھنا چاہتے ہیں ۔ لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ ہم اپنے دفاع سے غافل ہو جائیں ۔ ہمیں اپنے گردو پیش پر نظر رکھنے کی ضرورت ہے۔ ہمیں اتنا مضبوط ہونا چاہیے کہ کوئی ہماری طرف بُری آنکھ سے نا دیکھ سکے۔  موجودہ  زمانے میں مضبوط دفاع ہی امن کی ضمانت ہے۔ 

English Translation:
Pakistan is a peace-loving country. We always want to keep friendly relations with our neighbors. But that doesn't mean that we ignore our defense. We need to keep an eye on our surroundings. We should be strong enough that no can think of harming us. In the present age, a strong defense is the assurance of peace.
Paragraph 5
ہمارے سکولوں میں بچوں کو جسمانی سزا دی جاتی ہے۔ اس کا مقصد بظاہر بچے کی اصلاح کرنا ہوتا ہے۔ لیکن یہ دیکھا جاتا ہے کہ سزا کی وجہ سے بچے خود اعتمادی کھو دیتے ہیں۔ ان میں جارحانہ رویہ پیدا ہوتا ہے اور بغاوت کے جزبات پیدا ہوتے ہیں۔ نتیجے کے طور پر وہ استاد اور سکول سے نفرت کرنا شروع کر دیتے ہیں۔ اور سکول جانا چھوڑ دیتے ہیں۔
Children are given corporal punishment in our schools. The apparent purpose of this is to reform the child. But it is observed that children lose their self-confidence due to punishment. They become aggressive. Emotions of defiance are developed in them. Consequently, they start hating the teacher and the school and quit schooling.



Want to read more Paragraphs?
Other Notes of 2nd Year:

No comments:

Post a Comment

please give your comments

Latest Posts